News ٰآس پاسٰ برصغیر تازہ ترین

کروناقہر: شراب دوکانوں کے باہر لگیں لمبی قطاریں

کورونا انفیکشن کی وجہ سے ملک گیر لاک ڈاؤں کے تیسرے مرحلے کی شرعات شراب کے عادی افراد کے لئے راحت بھرا ہے۔
لکھنؤ،کانپور،اور غازی پور سمیت ریاست کے زیادہ تر اضلاع میں شراب کی دوکانیں کھلنے سے پہلے ہی لمبی قطاریں لگنی شروع ہوگئیں۔سماجی دوری پر عمل کرانے کے لئے اتوار کی شام سے ہی شراب کی دوکانوں کے باہر دائرے بنانے شروع ہوگئے تھے۔ دوکانوں کے کھلنے کا وقت صبح دس بجے طے تھا لیکن اس سے کافی پہلے ہی لوگوں دوکانوں کے سامنے قطار میں کھڑے تھے۔

حکومت نے زیادہ سے زیادہ خردہ قیمت(ایم آر پی) پر شراب فروخت کی اجازت دئیے ہیں۔طے قیمت سے زیادہ وصول کرنے والے دوکانداروں کے خلاف سخت کاروائی کی جائےگی۔اس سے پہلے شبہ کا اظہار کیا گیا تھا کہ لاک ڈاؤں کے دوران روزگار ختم ہونے کا سیدھا اثر شراب کی فروخت پر پڑے گا جس سے محکمہ آبکاری کے ذریعہ ریونیو اضافے کی حکومت کی منشی کو جھٹکا لگے گا لیکن شراب کے عادی افراد نے سبھی شبہا ت کو غلط ثابت کردیا۔اور دوکانیں کھلتے ہی بڑی تعداد میں شراب کی بوتلیں خریدیں۔

اس دوران کچھ جگہوں پر مارپیٹ اور شور شراب کے کچھ واقعات بھی پیش آئے جسے قابو میں کرنے کے لئے پولیس کو معمول طاقت کا استعمال کرنا پڑا لیکن زیادہ تر مقامات پر لوگوں نے تحمل کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی باری کا انتظار کیا ۔وہیں دوسری جانب شراب کے فروخت کے خلاف بھی کچھ لوگوں نے آوازیں بلند کیں۔ لوگ حکومت کے اس فیصلے پر سوالیہ نشان لگارہے ہیں۔ نیز شرابیوں کے حوالے سے فیس بک وہاٹس ایپ پر مزاحیہ پوسٹوں کا دور جاری ہے

3,946 total views, 0 views today

Leave a Reply

Your email address will not be published.