News ٰآس پاسٰ برصغیر تازہ ترین

نئی حدبندی پرپورے بھارت میں قدغن مگرکشمیرنئی حدبندی کی زد پر

سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے منگل کو سماجی رابطہ گاہ ٹیوٹر پر اپنا پیغام درج کرتے ہوئے کہا کہ2026تک حد بندی پر تمام ملک میں روک ہے،جبکہ اس کے برعکس’’کچھ کم علم ٹی وی چنلیں اس کو فروخت کرنا چاہتی ہیں،یہ جموں کشمیر تک مخصوص روک نہیں ہے۔‘‘عمر عبداللہ نے اس بات پر حیرانگی کا اظہار کیا’’جموں کشمیر کو دیگر ریاستوں کے برابر لانے کی بات کرنے والی بے جے پی،آئین ہند کی دفعہ370اور شق35ائے کو ختم کرکے،اس معاملے میں جموں کشمیر سے مختلف طریقے سے نپٹنا چاہتی ہے۔‘‘انہوں نے مزید کہا’’جب ملک کے دیگر حصوں میں حدبندی ہوگی،بے جے پی کو جموں کشمیر میں اس کا اطلاق کرنے پر خیر مقدم کیا جائے گا،تاہم اس وقت تک عوامی منڈیٹ کے بغیر اس کا فیصلہ کرنے کیلئے نیشنل کانفرنس اس کی سخت مخالفت کرے گی۔اپنے کئی ٹویٹ میں عمر عبداللہ نے نئی حد بندی کے حوالے سے آئینی بحث چھیڑتے ہوئے کہاہے کہ جموں وکشمیر میں نئی حد بندی پر روک اس وقت ریاست کو دیگر ریاستوں کے مساوی کرنا تھا ۔انہوں نے کہاکہ آئین کی ہند کی 2001کی ترمیم کی رو سے دفعہ82او170میں ترمیم کرکے ملک بھر میں2026تک نئی حد بندیوں پر روک لگا دی ۔جس کے بعد 2002میں جموں وکشمیر کے آئین میں بھی ترمیم کرکے نئی حد بندیوں پر روک لگادی گئی تاکہ اسے ملک کے مساوی کیا جائے ۔عمر عبداللہ کے مطابق اس فیصلے کیخلاگ نیشنل پینتھرس پارٹی کے سربراہ پروفیسر بھیم سنگھ نے جموں کے ساتھ امتیازی سلوک کا دعوی کرتے ہوئے عدالت عالیہ سے اس آئینی ترمیم کے خلاف پٹیشن دائر کی جسے عدالت عالیہ نے خارج کیا ۔اسکے بعد انہوں نے سپریم کورٹ میں یہ پیٹیشن دائر کی تاہم سپریم کورٹ نے بھی اس پٹیشن کو خارج کیا ۔عمر عبداللہ نے کہاکہ اگر جموں وکشمیر میں نئی حد بندی کی سمت کوئی قدم اٹھایا گیا تو یہ آئین ہند کی رو سے ملک بھر میں نئی حد بندیوں پر روک لگائے جانے کے فیصلے کے متضاد ہہوگا ۔ادھر‘‘ بی جے پی نے2008میں پہلی مرتبہ جون میں امرناتھ یاترا کے دوران حد بندی کا مطالبہ کیا تھا۔بی جے پی کے ریاستی جنرل سیکریٹری اشوک کول نے ریاست میں حد بندی کے کسی بھی عمل کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا’’ہم نے ماضی میں یہ مطالبہ کیا ہے،جبکہ یہ پی ڈی پی کے ساتھ ایجنڈا آف الائنس میں بھی شامل تھا۔‘‘انہوں نے گورنر پر زور دیا کہ جموں خطے کے ساتھ امتیازی سلوک کو ختم کرنے کیلئے حدبندی کمیشن کو انتخابات سے قبل قائم کیاجانا چاہئے۔ سابق خاتون وزیر اعلیٰ اور پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی نے سماجی رابطہ گاہ ٹیوٹر پر اپنا پیغام درج کرتے ہوئے کہا’’ جموں کشمیر میں اسمبلی حلقہ انتخابات کو سر نو متعین کرنے کیلئے حکومت ہند کے منصوبے کو سن کر مایوس ہوئیں۔‘‘انہوں نے کہا کہ فرقہ وارانہ سطح پر ریاست میںجبر ی حد بندی ایک اور جذباتی تقسیم ہوگی،اور پرانے زخموں پر مرہم لگانے کے بجائے حکومت ہند کشمیریوں کو درد دے رہی ہے

1,906 total views, 0 views today

9 Replies to “نئی حدبندی پرپورے بھارت میں قدغن مگرکشمیرنئی حدبندی کی زد پر

  1. I was wondering if you ever considered changing the page layout of your website?
    Its very well written; I love what youve got to say.
    But maybe you could a little more in the way of content so people could connect with it better.
    Youve got an awful lot of text for only having one or two images.
    Maybe you could space it out better?

  2. I think this is among the most vital info for me.
    And i’m glad reading your article. But want to remark on few general things, The
    website style is perfect, the articles is really excellent :
    D. Good job, cheers

  3. Independance Immobilière – Agence Dakar Sénégal
    Av. Fadiga, Immeuble Lahad Mbacké
    BP 2975 Dakar
    +221 33 823 39 30

    Agence Immobilière Dakar

    you are in point of fact a good webmaster. The website loading pace
    is incredible. It sort of feels that you are doing any
    unique trick. In addition, The contents are masterwork.

    you have performed a fantastic job on this matter!

  4. M.E.C Mon Electricien Catalan
    44 Rue Henry de Turenne
    66100 Perpignan
    0651212596

    Electricien Perpignan

    I every time spent my half an hour to read this blog’s content daily along with a mug of coffee.

  5. My family members every time say that I am killing my time here at net, however I
    know I am getting know-how daily by reading such
    nice posts.

  6. Howdy just wanted to give you a brief heads
    up and let you know a few of the images aren’t loading properly.
    I’m not sure why but I think its a linking issue.
    I’ve tried it in two different internet browsers and
    both show the same outcome.

  7. When some one searches for his necessary thing, therefore he/she wants to
    be available that in detail, thus that thing is maintained over here.

Leave a Reply

Your email address will not be published.