News برصغیر تازہ ترین

نئی تعلیمی پالیسی کی آڑ میں نجکاری وغیر سائنسی سوچ کو فروغ دینے کی کوشش: تعلیمی ماہرین

نئی دہلی، 16 جولائی ممتاز ماہرین تعلیم اور تعلیمی اداروں سے منسلک تنظیموں نے کہا ہے کہ مودی حکومت نئی تعلیمی پالیسی کی آڑ میں اندھا دھند نجکاری کو فروغ دینا چاہتی ہے اور غیر سائنسی سوچ کو فوقیت دے کر اساتذہ برادری کو بھی دو حصوں میں تقسیم چاہتی ہے ۔
فیڈریشن آف سنٹرل یونیورسٹیز ٹیچرس ایسو سی ایشن (ایف ای ڈی سی یو ٹی اے) کی جانب سے آج یہاں نئی ​​تعلیمی پالیسی کے مسودے پر منعقد قومی سمینار میں مقررین نے یہ بات کہی۔
بہار، اتر پردیش، گجرات مغربی بنگال آندھرا پردیش، میزورم جیسی ریاستوں سے آئے اساتذہ لیڈروں کے علاوہ دہلی یونیورسٹی، جواہر لال نہرو یونیورسٹی، علی گڑھ مسلم یونیورسٹی ، شانتی نکیتن اور گجرات سنٹرل یونیورسٹی کے اساتذہ نے اس میں حصہ لیا.

1,820 total views, 0 views today

2 Replies to “نئی تعلیمی پالیسی کی آڑ میں نجکاری وغیر سائنسی سوچ کو فروغ دینے کی کوشش: تعلیمی ماہرین

  1. Useful information. Fortunate me I found your web site accidentally, and I’m shocked why this
    twist of fate didn’t came about earlier!
    I bookmarked it.

Leave a Reply

Your email address will not be published.