News ٰآس پاسٰ برصغیر تازہ ترین عالم اسلام

محرم پرجلوس کی سپریم کورٹ نےاجازت نہیں دی

سپریم کورٹ نے شیعہ مذہبی رہنما مولانا کلب جواد کو ملک بھر میں محرم کا جلوس نکالنے کی اجازت نہیں دی ہے ۔ چیف جسٹس ایس اے بوبڈے نے انہیں ہائی کورٹ جانے کا مشورہ دیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہائی کورٹ ریاست کے حالات کے پیش نظر اجازت دیں گے ۔ مولانا کلب جواد نے عرضی داخل کرکے پورے ملک کے الگ الگ شہروں میں محرم کا جلوس نکالنے کی اجازت مانگی تھی ۔

خیال رہے کہ ان دنوں کورونا وائرس کی وجہ سے مذہبی جلوس نکالنے کی اجازت نہیں ہے ۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ پورے ملک میں جلوس نکالنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ، کیونکہ ہر جگہ کے حالات الگ ہیں ۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ ہر ریاست کے ہائی کورٹس کو وہاں کے حالات کے پیش نظر اجازت دینی چاہئے ۔ عرضی گزار نے کہا کہ انہیں کم سے کم لکھنو میں جلوس نکالنے کی اجازت دی جائے ، کیونکہ شیعہ کمیونٹی کے زیادہ تر لوگ یہی رہتے ہیں ۔ سپریم کورٹ نے اس کے جواب میں کہا کہ انہیں اس کیلئے الہ آباد ہائی کورٹ سے رجوع کرنا چاہئے ۔
عدالت نے اس سے پہلے اوڈیشہ میں جگنناتھ یاترا کی اجازت دی تھی ، لیکن عدالت نے کہا کہ وہ صرف ایک شہر کا معاملہ تھا ، پورے ملک کا نہیں ۔ اگر پورے ملک کیلئے اجازت دیدی گئی تو پھر لوگ ایک ہی کمیونٹی کو کورونا وائرس کیلئے قصوروار ٹھہرانے لگیں گے

13 total views, 0 views today

Leave a Reply

Your email address will not be published.