News بین الاقومی تازہ ترین عالم اسلام

فلسطینی مسلمان 2 ہفتے بعد مسجدالاقصیٰ میں نماز ادا کریں گے

یروشلم: اسرائیلی پولیس کی جانب سے مسلمانوں کے مقدس مقام مسجد الاقصیٰ سے تمام نئے حفاظتی اقدامات کو ہٹانے کے اعلان کے بعد دو ہفتوں میں پہلی بار فلسطینی مسلمان مسجد الاقصیٰ کے احاطے میں نماز ادا کریں گے۔
فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کا اسرائیلی پولیس کی ترجمان لوبا سمری کے حوالے سے بتایا کہ ‘پولیس مسجد الاقصیٰ کی سیکیورٹی کو 14 جولائی کے روز ہونے والے دہشت گرد حملے سے پہلے جیسی صورتحال پر بحال کرچکی ہے’۔
خیال رہے کہ 14 جولائی کو مقبوضہ بیت المقدس میں قابض اسرائیلی فورسز نے مسجد الاقصیٰ کے احاطے میں نماز جمعہ سے قبل فائرنگ کرکے 3 فلسطینیوں کو قتل کردیا تھا۔
واقعے کے حوالے سے اسرائیل نے دعویٰ کیا تھا کہ تینوں فلسطینیوں نے باب الاسباط سے نکل کر اسرائیلی پولیس اہلکاروں پر مبینہ طور پر فائرنگ کی تھی، جس سے 3 افراد زخمی ہوگئے تھے۔
اس حملے کے فوراً بعد قابض اسرائیلی فوج نے مسجد الاقصیٰ کی تالا بندی کرتے ہوئے تاریخی شہر القدس کی مکمل ناکہ بندی کردی تھی اور مسجد الاقصیٰ کے دروازے پر میٹل ڈیٹیکٹر لگانے کا فیصلہ کیا تھا۔
ہٹائے گئے واک تھرو گیٹس کو ٹرک پر لاد کر مسجد سے باہر لے جایا جارہا ہے—فوٹو: اے ایف پی
ہٹائے گئے واک تھرو گیٹس کو ٹرک پر لاد کر مسجد سے باہر لے جایا جارہا ہے—فوٹو: اے ایف پی
اسرائیلی حکام نے 16 جولائی کو کیمرے اور واک تھرو گیٹس نصب کرنے کے بعد مسجد الاقصیٰ کو نمازیوں کے لیے کھول دیا تھا تاہم فلسطینی مسلمانوں نے نئے سیکیورٹی اقدامات کو مسترد کرتے ہوئے مسجد میں داخلے سے انکار کردیا تھا۔
جس کے بعد فلسطینی مسلمانوں کے احتجاج کو دیکھتے ہوئے 25 جولائی کو اسرائیلی حکام نے مسجد الاقصیٰ کے دروازوں پر نصب کیے گئے میٹل ڈیٹیکٹرز کو ہٹانے کا عمل شروع کردیا تھا۔
اسرائیلی پولیس کا تازہ ترین بیان سامنے آنے کے بعد جمعرات کے روز مسلمان انتظامیہ نے اپنے اجلاس میں مسجد میں نماز پڑھنے کا بائیکاٹ ختم کرنے کا فیصلہ کیا۔
اجلاس میں اس بات کا فیصلہ کیا گیا کہ دو ہفتے میں پہلی بار جمعرات کے روز فلسطینی مسلمان مسجد الاقصیٰ میں نماز کی ادائیگی کریں گے۔
محکمہ اوقاف کی انتظامیہ نے اے ایف پی کو بتایا کہ ‘یروشلم کی مسلمان انتظامیہ نے فلسطینیوں کو مسجد الاقصیٰ میں داخل ہونے اور ظہر کی نماز ادا کرنے کی دعوت دے دی ہے’۔
فلسطینی صدر محمود عباس نے بھی پریس کانفرنس میں فلسطینی مسلمانوں کو بائیکاٹ ختم کرنے اور مسجد آنے کی دعوت دی۔
صدر محمود عباس کا کہنا تھا، ‘انشاءاللہ نماز مسجد الاقصیٰ کے اندر ہی ادا کی جائے گی’۔
خیال رہے مسجد الاقصیٰ کے دروازوں پر میٹل ڈیٹیکٹرز کی تنصیب کے خلاف مظاہروں کے دوران کئی فلسطینی شہری زخمی ہوئے تھے۔
جبکہ اسرائیلی فوج کے ساتھ ہونے والی حالیہ جھڑپوں میں فلسطینیوں کی ہلاکت کے بعد فلسطین کے صدر محمود عباس نے اسرائیل کے ساتھ تعلقات ختم کرنے کا اعلان کردیا تھا۔
مسجد الاقصیٰ مسلمانوں کے لیے تیسری مقدس ترین جگہ ہے، تاہم یہودی بھی اس سے عقیدت رکھتے ہیں، یہ مقدس جگہ اسرائیل اور فلسطین کے درمیان کشیدگی کا باعث رہی ہے اور یہاں پرتشدد واقعات ہوتے رہتے ہیں۔
اگرچہ یہودی یہاں آسکتے ہیں تاہم انھیں مسجد کے احاطے میں عبادت کرنے کی اجازت نہیں ہے۔

2,837 total views, 0 views today

53 Replies to “فلسطینی مسلمان 2 ہفتے بعد مسجدالاقصیٰ میں نماز ادا کریں گے

  1. I really like your blog.. very nice colors &
    theme. Did you create this website yourself or did you hire someone to
    do it for you? Plz reply as I’m looking to create my
    own blog and would like to find out where u got this from. thanks

  2. Sweet blog! I found it while searching on Yahoo News. Do you have any tips on how to get listed in Yahoo News? I’ve been trying for a while but I never seem to get there! Thank you|

  3. Taxi moto line
    128 Rue la Boétie
    75008 Paris
    +33 6 51 612 712  

    Taxi moto paris

    Hi mates, how is the whole thing, and what you want to say on the topic of
    this post, in my view its truly amazing in favor of me.

  4. Do you have a spam problem on this blog; I also am a blogger, and I was
    curious about your situation; many of us have
    developed some nice methods and we are looking to swap techniques with others, why
    not shoot me an email if interested.

Leave a Reply to cheap cialis Cancel reply

Your email address will not be published.