News بین الاقومی تازہ ترین عالم اسلام

غیرممالک سےمسلمان آیاصوفیہ میں نماز ادا کرنےکیلئےترکی آنےلگے

آیا صوفیہ کو دوبارہ سے اسلام کی عبادت کے لیے کھولنے کے فیصلے نے ترک عوام کی طرح دیگر ممالک کے مسلمانوں میں بھی ہیجان پیدا کیا ہے
مختلف ممالک میں مقیم مسلمان ترک عدالت کے فیصلے اور صدر رجب طیب ایردوان کے دستخط کے ساتھ دوبارہ سے عبادت کے لیے کھولے جانے والی آیا صوفیہ جامع مسجد میں نماز کی ادائیگی کے لیے بڑے بے صبر ہو رہے ہیں۔

آیا صوفیہ کو دوبارہ سے اسلام کی عبادت کے لیے کھولنے کے فیصلے نے ترک عوام کی طرح دیگر ممالک کے مسلمانوں میں بھی ہیجان پیدا کیا ہے۔
برطانیہ میں مقیم بدر منیر باشندہ آیا صوفیہ میں ادائیگی نماز کے لیے برطانیہ سے ترکی آیا ہے۔

اس مقام پر عبادت کی بحالی پر اپنی دلی مسرت کا اظہار کرنے والے اس شخص نے 24 جولائی کو آیا صوفیہ میں نمازِ جمعہ ادا کرنے کے لیے بڑے بے صبر ہونے کا کہا ہے ۔
افغان شہری حبیب اللہ علی کوزئے نے آیا صوفیہ سے متعلق فیصلے پر انتہائی مسرت ہونے کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ ’’ہمیں دلی خوشی ہے کہ اس اہم مقام پر بھی ہم اللہ تعالی کے حضور میں سجدے کریں گے ، ہم صدر رجب طیب ایردوان کے مشکور و ممنون ہیں۔ میں اس مسجد میں نماز پڑھنے کی دلی تمنا رکھتا ہوں۔
بچوں اور اپنی والدہ کے ہمراہ ترکی کی سیر کو آنے والے اُردنی الا حرانی کنبے نے بھی استنبول کی سیر کرتے ہوئے آیا صوفیہ کے سامنے یادگاری تصاویر اتروائیں۔
اس شخص کی والدہ کا کہنا تھا کہ اس مقام پر دوبارہ سے عبادت کا آغاز انتہائی خوشی کا مقام ہے۔

انڈونیشیا سے ترکی میں اعلی تعلیم کے لیے آنے والی ہرناندا آگونگ نے آیا صوفیہ میں عبادت کی بحالی پر پر ہیجان ہونے کا اظہار کیا۔

144 total views, 0 views today

Leave a Reply

Your email address will not be published.