News ٰآس پاسٰ برصغیر تازہ ترین

صاحب استطاعت پرقربانی واجب،عبادت کامتبادل نہیں:دیوبند

معروف اسلامی ادارے دارالعلوم دیوبند نے حالات بالخصوص عالمی وبا کورونا وائرس کے پیش نظر مویشی کی قربانی کے بجائے اس کے بد ل کے طور پر غرباو مساکین کی مدد کے تاویلات کو بے بنیاد بتاتے ہوئے واضح کیا ہے کہ ہر صاحب استطاعت مسلمان پر قربانی کرنا واجب ہے۔قربانی شعائر اسلام میں سے ہے اور اس عبادت کا کوئی بدل نہیں ہوسکتا۔
دارالعلوم سے آج یہاں جاری بیان میں قرآن و حدیث کے حوالوں کے ساتھ کہا گیا ہے کہ جن مسلمانوں پر قربانی واجب ہے ان کے لئے ہر سال کی طرح امسال بھی قربانی کا اہتمام کرنا لازم اور ضروری ہے۔اس سلسلے میں کسی بھی طرح کی غفلت برتنا اسلام اور اہل اسلام کے لئے نقصان دہ ہے۔
دارالعلوم نے فقہائے کرام کے حوالے سے لکھا ہے کہ نماز پڑھنے سے روزہ اور روزہ رکھنے نماز کا فریضہ ادا نہیں ہوتا اسی طرح سے اگر کوئی شخص قربانی نہ کرکے چاہے کہ وہ جانور کی اس کی قیمت صدقہ کردے تو اس کی قربانی ادا نہ ہوگی اور وہ تارک عبادت سمجھا جائےگا۔
دارالعلوم نے قربانی کو شعائر اسلام قرار دیتے ہوئے لکھا ہے کہ’قربانی ایک ایسی عبادت ہے جو شعائر اسلام میں سے ہے یہ محض جانور کو ذبح کرنا نہیں ہے بلکہ اسلام کے شعار کے طور پر اس عبادت کو اجانچ دیا جاتا ہے۔اس عبادت کو کوئی بدل نہیں ہوسکتا ہے۔لہذا قربانی کے بجائے اس کی رقم غرباؤ ومساکین میں صدقہ کرنا قطعا درست نہیں ہے۔یہ سراسر ناواقفیت۔اسلام میں غرباء ومساکین کی مدد کا مستقل تاکید کا حکم ہے جس کے لئے صدقات واجبہ اور نافلہ دونوں کا نظام موجود ہے۔
قابل ذکر ہے کہ عید الاضحی کے قت کے قریب ہونے اور کورونا وائرس کی وجہ سے پیدا شدہ حالت کے پیش نظر یہ سوال اٹھنے لگے تھے کہ آیا ان حالات میں قربانی کے بجائے اس کی قرباء غرباء تقسیم کردینے سے قربانی کا فریضہ ادا ہوجائے گا یا نہیں۔
وہیں دوسری جانب اترپردیش حکومت نے بھی عیدالاضحی کے پیش نظر کسی قسم کی کوئی نرمی نہیں دی ہے جس کے بعد مسلمانوں میں قربانی کے تعلق سے تشویشات میں مزید اضافہ ہوگیا ہے

69 total views, 0 views today

Leave a Reply

Your email address will not be published.